Owais Razvi Qadri Siddiqui
Sufi Singer

دل میں عشقِ نبیؐ کی ہو ایسی لگن

0 104
دل میں عشقِ نبیؐ کی ہو ایسی لگن
روح تڑپتی رہے دل مچلتا رہے
زندگی کا مزا ہے کہ ہر سانس سے
یا محمد محمد نکلتا رہے
دل میں عشقِ نبیؐ کی ہو ایسی لگن
یا محمد محمد میں کہتا رہی
نور کے موتیوں کی لڑی بن گئی
آیتو ں سے ملاتا رہی آ یتیں
پھر جو دیکھا تو نعتِ نبیؐ گئی
جو بھی آنسو بہے میرے محبوب کے
سب کے سب ابرِ رحمت کے چھینٹے بنے
چھاگئی رات جب زلف لہراگئی
جب تبسمّ کیا چاندنی بن گئی
یہ تو مانا کہ جنتّ ہے باغِ حسیں
خوبصورت ہے سب خُلد کی سرزمیں
حسنِ جنت کو پھر جب سمیٹا گیا
سرورِ انبیا ء کی گلی بن گئی
جب چھیڑا تزکرہ حسنِ سرکار کا
والضحیٰ کہہ دیا والقمر پرھ لیا
آیتوں کی تلاوت بھی ہوتی رہی
نعت بھی ہو گئی بات بھی بن گئی
سب سے صائم زمانے میں معذور تھا
سب سے بے کس تھا بے بس تھا مجبور تھا
اُ ن کو رحم آگیا میرے حالات پر
میری عظمت میری بے بسی بن گئی
دل میں عشقِ نبیؐ کی ہو ایسی لگن
روح تڑپتی رہے دل مچلتا رہے
زندگی کا مزا ہے کہ ہر سانس سے
یا محمد محمد نکلتا رہے

Dil main ishq e Nabi ki ho aisi lagan,
Ruh tarapti rahe dil machalta rahe
Zindagi ka maza hey kay har saans say
Ya Muhammad Muhammad (Sallallaho Alayhi Wasallam) nikalta rahey.

Dil Main Ishq-e-Nabi Kee Ho Aesee Lagan
Ya Muhammad Muhammad mein kehta raha,
Noor kay motiyo ki lare ban gaee,
Ayaton sey milata raha ayatein,

Phir jo dekha to Naat e Nabi ban gaye.
Jo bhi ansoo bahe merey Mehboob kay,
Sab key sab abr e rehmat kay cheentay banay,
Chah gaee raat jab zulf lehra gaee,

Jab tabasum kiya chandani ban gaee.
Yeh to maana kay jannat hai bagh e haseen,
Khoobsoorat hey sab khuld ki sar zameen,
Husn e jannat ko phir jab samayta gaya,

Sarwar e ambiya ki galee ban gaee.
Jab chirah tazkira un kay rukhsaar ka,
Waduha par liya, wal qamar keh dia,
Sooraton kee tilawat bhi hoti rahi,

Naat bhi ho gayi baat bhi ban gayi.
Sab say saim zamanay main mazoor tha,
Sab sey beykas tha beybas tha majboor tha ,
Un ko reham agaya merey halaat par,
Meree azmat meree beybasee ban gaee.

Dil mein ishq e Nabi ki ho aisi lagan,
Rooh tarapti rahay dil machalta rahay,
Zindagi ka maza hai kay har saans say,
Ya Muhammad Muhammad nikalta rahey

Comments
Loading...