Owais Razvi Qadri Siddiqui
Sufi Singer

اب تو بس ایک ہی دُھن ہے کہ مدینہ دیکھوں – Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai

191

آخری وقت میں کیا رونقِ دنیا دیکھوں
اب تو بس ایک ہی دُھن ہے کہ مدینہ دیکھوں

از اُفق تا بہ اُفق ایک ہی جلوہ دیکھوں
جس طرف آنکھ اٹھے روضئہ والا دیکھوں

عاقبت میری سنور جائے جو طیبہ دیکھوں
دستِ امروز میں آئینہ فردا دیکھوں

میں کہاں ہوں ، یہ سمجھ لوں تو اٹھاؤں نظریں
دل سنبھل جائے تو میں جانبِ خضرا دیکھوں

میں نے جن آنکھوں سے دیکھا ہے کبھی شہرِ نبی
اور ان آنکھوں سے اب کیا کوئی جلوہ دیکھوں

بعد رحلت بھی جو سرکار کو محبوب رہا
اب ان آنکھوں سے میں خوش بخت وہ حجرہ دیکھوں

فقر و فاقہ ہی رہا جس کے مکینوں کا نصیب
چشمِ عبرت سے میں وہ مسکنِ زہرا دیکھوں

جالیاں دیکھوں کے دیوار و در و بامِ حرم
اپنی معذور نگاہوں سے میں کیا کیا دیکھوں

میرے مولا مری آنکھیں مجھے واپس کر دے ؎۱
تاکہ اس بار میں جی بھر کے مدینہ دیکھوں

جن گلی کوچوں سے گزرے ہیں کبھی میرے حضور
ان میں تا حدِ نظر نقشِ کفِ پا دیکھوں

تاکہ آنکھوں کا بھی احسان اٹھانا نہ پڑے
قلب خود آئینہ بن جائے میں اتنا دیکھوں

کاش اقبالؔ یوں ہی عمر بسر ہو میری
صبح کعبے میں ہو اور شام کو طیبہ دیکھوں

 

واضح رہے کہ پروفیسر سیّد اقباؔل عظیم صاحب بصارت سے محروم ہوچکے تھے

Aakhri Waqt Mein Kya Ronaq E Duniya Dekhoon
Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Isne Bhi Madina Dekh Liya Usne Bhi Madina Dekh Liya
Sarkar Kabhi Toh Mai Bhi Kahu Mai Ne Bhi Madina Dekh Liya
Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Mainu Majburiya Ne Dooriya Ne Maare Aa
Sadh Lo Madine Aaqa Karu Meherbaniyan

Thu Saan Te Hai Dera Mai Toh Badi Door Aa Gaya
Sadh Lo Madine Aaqa Karo Meherbaniyan
Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Phir Karam Ho Gaya Mai Madine Chala
Jhoomta Jhoomta Mai Madine Chala

Saakiya Meh Pila Mai Madine Chala
Mast O Bekhud Bana Mai Madina Chala

Mere Aaqa Ka Dar Hoga Peshe Nazar
Chahiye Aur Kya Mai Madine Chale
Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Ek Roz Hoga Jana Sarkar Ki Gali Me
Hoga Wahi Thikana Sarkar Ki Gali Me
Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Teri Jaliyon Ke Niche Teri Rehmato Ke Saaye
Jise Dekh Ni Ho Jannat Woh Madina Dekh Aaye
Ab Toh Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Mere Maula Meri Aankhe Mujhe Wapas Karde
Taake Iss Bar Mai Jeebhar Ke Madina Dekhoon
Ab To Bas Ek Hi Dhun Hai Ke Madina Dekhoon

Bulalo Phir Mujhe Aye Shah E Bahrobar Madine Me
Mai Phir Rota Huwa Aau Tera Dar Par Madine Me

Madine Jaane Waalo Jaao Jaao Fi Aman’illah
Kabhi Toh Apna Bhi Lag Jayega  Bistar Madine Me

Comments
Loading...